128

آئی جی پنجاب نے ہاتھ بڑھایا، وزیراعلیٰ مصافحہ کیے بغیرہی چلے گئے

پولیس ٹریننگ سینٹر میں آئی جی پنجاب کا مصافحے کے لیےبڑھایا گیا ہاتھ بڑھا رہ گیا اور وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار مصافحہ کیے بغیرہی چلے گئے۔
وزیر اعظم عمران خان وزیر اعلیٰ پنجاب عثمان بزدار کو اپنی ٹیم کا وسیم اکرم قرار دیتے ہیں لیکن بعض اوقات وہ ایسے کام کرجاتے ہیں جن سے ان پر تنقید کا جواز پیدا ہوجاتا ہے، ایسے ہی کچھ واقعات ملتان میں پیش آئے ہیں جہاں انہوں نے اپنا دن مختلف تقاریب میں گزارا۔
سانحہ ساہیوال کے روز عثمان بزدار کے شاہانہ دورے کی گرد ابھی بیٹھی ہی تھی کہ ملتان میں انتظامیہ نے ان کے دورے کے دوران سڑکوں کے علاوہ اہم مارکیٹوں، بازاروں اور کاروباری مراکز ہی بند کرادیئے۔ ان کی آمد پر900 پولیس افسران اور سیکیورٹی اہلکاروں نے ڈیوٹی سرانجام دی۔
عثمان بزدار نے پولیس ٹریننگ انسٹی ٹیوٹ ملتان میں اہلکاروں کی پاسنگ آؤٹ تقریب میں شرکت کی، اس موقع پرآئی جی پنجاب نےوزیراعلیٰ کو یادگاری شیلڈ پیش کی۔ شیلڈ وصولی کے بعد آئی جی پنجاب نے وزیراعلیٰ سے مصافحے کے لیے ہاتھ آگے بڑھایا لیکن سیاہ چشمے پہنے عثمان بزدار کو آئی جی پنجاب کا ہاتھ ہی نظر نہیں آیا اور وہ مصافحہ کیے بغیرہی چلے گئے۔
آئی جی پنجاب بھی اپنی دھن کے پکے نکلے، وہ مصافحہ کرنے کی اپنی خواہش کو دبانے کے بجائے عثمان بزدار کے پیچھے گئے اور انہیں اپنی جانب متوجہ کرکے ہاتھ ملا ہی لیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں