84

آصف سعید کھوسہ نے ہائیکورٹ کا جج بننے سے انکار کیا: والد کی تحریر

ان کے والد فیض محمد کھوسہ بلند پایہ وکیل تھے۔ اپنی خودنوشست ”ہاروسٹ آف ہوپ“ میں ہ اپنے بیٹے (چیف جسٹس) آصف کھوسہ کے بارے میں لکھتے ہیں ”(چیف جسٹس) آصف سعید کھوسہ بچپن سے ہی ہمیشہ اپنے فیصلے خود آزادانہ اندا زمیں کرتے تھے۔ ان کے ارادوں میں کسی اور کا کوئی عمل دخل نہ تھا۔ زندگی بھر انہوں نے اپنی پسند کو فوقیت دی اور کسی بھی خارجی دباﺅ سے آزاد رہ کر جو کچھ بھی صحیح اور بہتر خیال کیا اسی عزم صمیم پر قائم رہے۔ انہیں کسی بھی ادارے کا سرونٹ بننا ہرگز قبول نہ تھا حتیٰ کہ سول سرونٹ بھی نہیں۔ حتیٰ کہ جب لاہور ہائیکورٹ کے جج بننے کی پیش کش ہوئی تو بھی انہوں نے ہچکچاہٹ کا مظاہرہ کیا۔ انہیں منانے کیلئے مجھے سینئر ایڈووکیٹ اعجاز حسن بٹالوجی سے درخواست کرنا پڑی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں