126

احتساب عدالت نے کامران مائیکل کا راہداری ریمانڈ منظور کرلیا

احتساب عدالت نے سابق وزیر پورٹ اینڈ شپنگ کامران مائیکل کا راہداری ریمانڈ منظور کرلیا۔ قومی احتساب بیورو (نیب) نے مسلم لیگ (ن) کے رہنما کامران مائیکل کو احتساب عدالت پہنچا دیا جہاں ملزم کے راہداری ریمانڈ کی استدعا کی گئی۔
عدالت نے کہا کیا کیا ریفرنس میں کامران مائیکل کا نام شامل ہے جس پر نیب پراسیکیویٹر کا کہنا تھا کہ اس ریفرنس میں مائیکل کا نام نہیں لیکن تفتیش کرنی ہے، اس لئے پکڑا ہے، اور گرفتاری کا وارنٹ بھی عدالت میں پیش کردیا، ملزم کامران مائیکل نے ہاوسنگ سوسائٹی میں 3 پلاٹ غیر قانونی طور پر الاٹ کئے۔
کامران مائیکل کے وکیل نے عدالت کو بتایا کہ جس ریفرنس کی بات کر رہے ہیں، اس میں مائیکل کا نام نہیں اور اس سوسائٹی کا تعلق پورٹس اینڈ شیپنگ سے نہیں، پہلے اس ریفرنس سے لنک پیش کریں اور ریفرنس منگوائیں،راہداری ریمانڈ کی ضرورت نہیں۔
عدالت نے ریمارکس دیے کہ اگر نیب کا کیس نہیں بنتا تو وہاں جا کر بتائیں، وارنٹ غلط ہے یا صحیح، جاری ہو گیا تو ہم اسے راہداری ریمانڈ پر بجھوا دیتے ہیں، اب ملزم کو ایک ماہ بٹھا تو نہیں سکتے، وارنٹ چیلنج کرنا ہے تو وہاں جا کر کریں،ملزم کو وہاں پیش کرنا ہے جہاں سے وارنٹ جاری ہوا۔
واضح رہے نیب نے گزشتہ روز سابق وفاقی وزیر کامران مائیکل کو لاہور سے گرفتار کیا تھا، کامران مائیکل پر بحیثیت وزیر اپنے اختیارات کے غلط استعمال کا الزام ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں