77

اورنج ٹرین کے 26سٹیشن،صرف2پرپارکنگ

اورنج ٹرین کی تعمیر کے دوران منصوبے پر من و عن عمل درآمد نہ ہوسکا،ہرسٹیشن پر پارکنگ کی سہولت نہ دی جاسکی، ٹرین کے 26 سٹیشنوں میں سے صرف2پر پارکنگ کی سہولت موجود ہے ۔دوسری جانب بچہ اورنج ٹرین کے ہینڈل کو پکڑ کر جھولے لیتا رہا۔ تفصیل کے مطابق میٹرو اورنج لائن ٹرین ٹریک پر فراٹے بھر رہی ہے اور لوگوں کی کثیر تعداد اس کا استعمال بھی کر رہی ہے ۔ اورنج ٹرین کی تعمیر کے لیے بنائے گئے پی سی ون میں یہ شق رکھی گئی تھی کہ ہر سٹیشن کے ساتھ پارکنگ سٹینڈ بنایا جائے گا مگر سٹیشنز پر گاڑیوں اور موٹر سائیکلوں کی پارکنگ کے لیے کوئی انتظام نہیں کیا گیا۔صرف علی ٹاؤن اور جی پی او سٹیشن پر پارکنگ کی سہولت میسر ہے ، باقی 24 سٹیشنز پر پارکنگ کے لیے کوئی جگہ مختص نہیں کی گئی حتیٰ کہ اورنج ٹرین سٹیشنز پر آنے والا عملہ بھی اپنی سواریوں کو پارک کرنے کے لیے تذبذب کا شکار ہے ۔پراجیکٹ ڈائریکٹر اورنج ٹرین اقرار حسین کا کہنا ہے ہر سٹیشن کے ساتھ کچھ اراضی موجود ہے ، جس پر 25 موٹر سائیکلیں پارک کرنے کی گنجائش ہے ، منصوبہ بنا رہے ہیں اس جگہ کو باضابطہ پارکنگ ڈکلیئر کردیں۔دوسری جانب اورنج ٹرین میں بچوں نے کھیل کود شروع کر دی، ٹرین میں سفر کرتے ہوئے بچے کی ہینڈل کے ساتھ جھولے لینے کی ویڈیو وائرل ہوگئی، بچہ ہینڈل کو تھامے گھوم کر محظوظ ہورہا ہے جبکہ ٹرین میں کوئی عملہ تعینات نہ ہونے کی وجہ سے بچے کو کسی نے نہیں روکا۔اورنج ٹرین کے اثاثوں کو بچانے کے لیے انتظامیہ کو ٹھوس اقدامات کرنے کی ضرورت ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں