214

ایک سال میں سبزیاں6گناتک مہنگی

ایک سال میں سبزیوں کی قیمتوں نے ریکارڈ توڑ دئیے ۔ گزشتہ برس کے مقابلے میں ٹماٹر 6،آلو 2، پیاز 4اور لہسن 3 گنا مہنگا ہو گیا ۔سبزی مارکیٹ میں ٹماٹر کی قیمت گزشتہ روز کم تو ہوئی لیکن گزشتہ برس کے مقابلے میں 6 گنا مہنگا فروخت ہو رہا ہے ۔سواتی ٹماٹر آنے سے قیمت کم ہونے لگی لیکن کمی کے باوجود اکثر مقامات پر 200روپے کلو سے کم پر دستیاب نہیں ۔گزشتہ روز مارکیٹ نرخ میں ٹماٹر کی قیمت 10 روپے کمی سے 165 روپے کلو رہی جبکہ گزشتہ برس ان ہی دنوں میں ٹماٹر کی سرکاری قیمت صرف 30روپے کلو تھی ،چھوٹی سبزی منڈیوں میں 180 اور عام دکانوں پر 200 سے 220 روپے کلو تک ٹماٹر فروخت ہوا ۔مارکیٹ ماہرین کے مطابق گزشتہ دنوں عید میلاد النبی پر نذر نیاز کے باعث ٹماٹر کی طلب میں اضافہ ہوا اور قیمت بڑھی ۔پیاز کی قیمت میں تیزی جاری ہے ۔ریٹ لسٹ میں پیاز 6 روپے اضافے سے 78 روپے تاہم دکانوں پر 100 روپے کلو سے زیادہ پر ہی فروخت ہوا۔ گزشتہ برس پیاز کی سرکاری قیمت 20 روپے کلو تھی ۔سبزی مارکیٹ میں تجارت کرنے والے انیس احمد کا پیاز کی قیمت بارے کہنا تھا اگر بنگلہ دیش کو پیاز کی برآمد کی گئی تو مارکیٹ میں قیمت میں تیزی کا امکان ہے ۔ گزشتہ برس نومبر کے دوسرے ہفتے میں آلو کی سرکاری قیمت 30 روپے کلو تھی جو کہ اب 55 روپے کلورہی ۔ آلو عام مارکیٹ میں 70سے 80 روپے کلو فروخت کیا گیا ۔لہسن عام مارکیٹ میں 300 روپے جبکہ ادرک 400روپے کلو تک فروخت ہوا ، شملہ مرچ 280 سے 300 ،کریلے اور بھنڈی 85 ،گوبھی 50 روپے کلو تک بیچی گئی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں