63

حکومت نے ہاتھ کھڑے کر دئیے:پی ایچ اے مالی بحران سے دو چار

پی ایچ اے لاہور کو مالی بحران سے نکالنے کے لیے پنجاب حکومت نے ہاتھ کھڑے کر دئیے ، پی ایچ اے کے حکومت سے فنڈز کی استدعا کے لیے لکھے گئے مراسلے کا جواب آگیا، وزیر اعلیٰ نے ازخودمالی وسائل پیدا کرنے کی ہدایت کر دی۔ ذرائع کے مطابق ماضی میں سبسڈی اور حکومتی گرانٹ سے چلنے والے ادارے پی ایچ اے کو موجودہ حکومت نے پیسے جاری نہیں کئے جس سے موجودہ حالات میں پی ایچ اے شدید مالی بحران سے دوچار ہو گیا۔بجٹ میں ترقیاتی اور غیر ترقیاتی اخراجات آمدن سے زائد ہونے کی بنا پر ادارے کو چلانا انتظامیہ کے لیے مشکل ہوگیا۔ پی ایچ اے نے مالی بحران سے نکلنے کے لیے پنجاب حکومت سے مالی مدد مانگی مگر پنجاب حکومت نے پی ایچ اے کو فنڈز دینے سے انکار کر دیا۔پی ایچ اے نے مالی سال 2020-21 کے انتظامی معاملات چلانے کے لیے وزیر اعلیٰ سے 2 ارب 20 کروڑ روپے مانگے تھے مگروزیر اعلیٰ نے خود وسائل پیدا کرنے کی ہدایت کر دی۔ مراسلے میں پنجاب کی تمام پی ایچ ایز کو وسائل بڑھانے کیلئے بزنس پلان تیار کرنے کی ہدایت کی گئی ہے تاکہ ادارے اپنے اخراجات کو کم کرکے آمدن میں اضافہ کریں، موجودہ حالات میں پنجاب حکومت ،پی ایچ اے کو سپلیمنٹری گرانٹ جاری نہیں کر سکتی۔ وزیر اعلیٰ کے مراسلے کے بعد پی ایچ اے نے بزنس پلان کی تیاری شروع کر دی تاکہ مالی وسائل میں اضافہ کیا جاسکے ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں