132

دبئی میں جائیدادوں پر 10 روز میں جواب طلب

سپریم کورٹ نے بیرون ملک پاکستانیوں کے اثاثوں اور غیرملکی اکاﺅنٹس سے متعلق کیس کی سماعت کے دوران تمام 20 افراد کو 10 روز میں ایف بی آر اور ایف آئی اے کو جواب دینے کا حکم دیا ہے۔ چیف جسٹس پاکستان میاں ثاقب نثار نے دوران سماعت کہا کہ متحدہ عرب امارات میں جائیداد خریدنے والے 20 دوستوں کو بلایا تھا ان میں سے ہر ایک دوست باری باری آجائے۔ ڈی جی ایف آئی اے بشیر میمن نے جواب دیا کہ ان بیس میں سے سات لوگ بیرون ملک ہیں۔ چیف جسٹس نے استفسار کیا کہ کیا یہ لوگ عارضی طور پر ملک سے باہر گئے ہیں؟ ڈی جی ایف آئی نے جواب دیا کہ 5 لوگ عدالتی نوٹس پر بھاگ گئے۔ چیف جسٹس نے سوال کیا کہ کیا واقعی پانچ افراد بھاگ گئے ہیں؟ جس پر ڈی جی ایف آئی اے نے کہا کہ میں حتمی طور پر نہیں کہہ سکتا۔ اس موقع پر نوشاد ہارو ن نے عدالت میں موقف اختیار کیا کہ ایف آئی اے نے میرے نام 12 جائیدادیں ظاہر کی ہیں حالانکہ میرے نام صرف ایک پراپرٹی ہے وہ بھی ایمنسٹی میں ظاہر کی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں