224

دھمکیاں دی جارہی ہیں، تحفظ فراہم کیا جائے :کانسٹیبل فائزہ

وکیل کی بدسلوکی کا شکار لیڈی کانسٹیبل فائزہ نواز کا کہنا ہے کہ جب عزت نفس پر حملہ ہو تو کوئی لڑکی خاموش نہیں رہ سکتی۔لاہور میں پاکستان تحریک انصاف کی رہنماؤں کے ہمراہ نیوز کانفرنس میں فائزہ نے کہا کہ نہ سیاست کر رہی ہوں نہ اپنے محکمے کی طرف سے بول رہی ہوں۔ ملازمت سے استعفیٰ نہیں دیا، دھمکیاں دی جارہی ہیں، تحفظ فراہم کیا جائے ۔ جب کسی خاتون کی عزت نفس پر حملہ ہو تو وہ خاموش نہیں رہ سکتی۔پی ٹی آئی کی ارکان صوبائی اسمبلی عظمیٰ کاردار اور مسرت جمشید چیمہ کا کہنا ہے کہ خوشی کی بات یہ ہے کہ حکومت لیڈی کانسٹیبل کے ساتھ کھڑی ہے ، عدلیہ سے درخواست ہے کہ وہ بھی معاملے کا نوٹس لے ۔ خواتین ارکان پنجاب اسمبلی کا یہ بھی کہنا تھا کہ اگر فائزہ کو انصاف نہ ملا تو یہ سب خواتین پر ظلم کے مترادف ہوگا۔ چیف جسٹس کو خط لکھا ہے کہ اس بچی کو انصاف ملنا چاہیے ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں