22

شہباز شریف فیملی کے خلاف وعدہ معاف گواہ مشتاق چینی کا بیان سامنے آگیا

منی لانڈرنگ ریفرنس میں شہباز شریف کی فیملی کے خلاف وعدہ معاف گواہ مشتاق چینی کا بیان سامنے آگیا ہے۔
احتساب عدالت میں منی لانڈرنگ ریفرنس میں صدر مسلم لیگ (ن) شہباز شریف کی فیملی کے خلاف وعدہ معاف گواہ بننے والے مشتاق چینی کا بیان سامنے آگیا ہے، احتساب عدالت نے بیانات کی کاپیاں شہباز شریف اور حمزہ شہباز سمیت دیگر کو فراہم کردیں ہیں۔
مشتاق چینی نے بیان میں کہا کہ قاسم قیوم اور عبدالقیوم نے میرے اکاؤنٹ سے 6 کروڑ کی ٹی ٹیز لگوائیں، طریقہ کار یہ تھا کہ میں نے قاسم قیوم کو نقد 6 کروڑ روپے دیے، قاسم قیوم نے وہ ٹی ٹیز لگوائی اور یہ ظاہر کیا کہ یہ رقم مجھے باہر سے موصول ہوئی ہے جب کہ 2014 میں مجھے سلمان شہباز کا کالا دھن سفید کرنے کے استعمال کیا گیا۔
مشتاق چینی نے کہا کہ مجھے کہا گیا کہ سلمان شہباز کے 60 کروڑ کو بیلک سے وائٹ منی میں منتقل کرنا ہے، میں نے بے بسی کا اظہار کیا تو کہا گیا صرف آپ کا اکاؤنٹ استعمال ہوگا، پرانے کاروباری تعلقات اور لالچ میں آکر میں نے اجازت دے دی، 2014 میں سرکلر روڈ برانچ سے 21 کروڑ 40 لاکھ کی ٹی ٹیز لگوائی گئیں، اسی سال پھر مشتاق اینڈ کمپنی کے اکاؤنٹ سے 29 کروڑ 30 لاکھ کی ٹی ٹیز لگائی گئیں۔
مشتاق چینی نے بیان میں مزید کہا کہ اس رقم کے برابر چیک میں نے کاٹ کر محمد عثمان کے حوالے کر دیے، وقار ٹریڈنگ کمپنی سے میرے اکاؤنٹ میں 10 کروڑ منتقل کیے گیے، اس رقم کے برابر کا چیک میں نے محمد عثمان کے حوالے کیا جب کہ سلمان شہباز نے ان ساری ٹرانزیکشن کے فرضی معاہدے تیار کروائے، معاہدوں کے مطابق 60 کروڑ کی رقم میں نے سلمان شہباز سے بطور قرض حاصل کی۔
مشتاق چینی کا کہنا تھا کہ مفروضی قرضے کو حقیقت کا رنگ دینے کےلیے سلمان شہباز نے 10 کروڑ میرے اکاؤنٹ میں منتقل کروائے تھے، میں نے سارا عمل کاروبار اور کالے دھن کو سفید کرنے کی لالچ میں کیا، میں اپنے عمل پر نادم ہوں اور معافی چاہتا ہوں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں