44

فیصلہ کن ون ڈے سے قبل تبدیلیوں کی ہوا چلنے لگی

فیصلہ کن ون ڈے سے قبل تبدیلیوں کی ہوا چلنے لگی جب کہ ٹیم مینجمنٹ ناکام ثابت ہونے والے آصف علی کو ڈراپ کرنے پر غورکررہی ہے۔
جنوبی افریقہ سے ابتدائی دونوں ون ڈے انٹرنیشنل میں دانش عزیز اور آصف علی پاکستان ٹیم کی کمزور کڑی ثابت ہوئے،ڈیبیو کرنے والے دانش جنوبی افریقی پیسر نورکیا کی شارٹ پچ بولنگ پر پریشان دکھائی دیے، وہ پہلے ون ڈے میں 3اوردوسرے میں 9رنز ہی بنا سکے، البتہ اس کے باوجود انھیں ٹیم میں برقرار رکھنے کا امکان ہے۔
ٹیم مینجمنٹ کو لگتا ہے کہ ایک نئے کھلاڑی کو جب منتخب کیا تو پورا موقع دینا چاہیے، اب نورکیا بھارت جا چکے شاید دانش کامیاب ثابت ہو جائیں،البتہ آصف علی کو ڈراپ کرکے حیدرعلی کو آزمایا جا سکتا ہے۔
آصف ابتدائی ون ڈے اسکواڈ میں شامل نہیں تھے، سعود شکیل کی انجری نے انھیں موقع فراہم کیا جس سے وہ فائدہ نہ اٹھا سکے، انھوں نے پروٹیز سے پہلے میچ میں 2 اوردوسرے میں 19رنز بنائے، انجرڈ شاداب خان کا خلا عثمان قادر پْر کریں گے۔
ذرائع نے بتایا کہ سرفراز احمد کو کھلانے کا زیادہ امکان نہیں لگتا، ٹیم مینجمنٹ محمد رضوان کو بطور اسپیشلسٹ بیٹسمین کھلا کر ٹیم کمبی نیشن سے چھیڑچھاڑ نہیں کرنا چاہتی، اسی طرح حسن علی کورونا سے صحتیاب ہونے کے بعدآہستہ آہستہ ردھم میں آرہے ہیں، گوکہ محمد حسنین کی جگہ انھیں میدان میں اتارنے کا آپشن موجود ہوگا مگر زیادہ امکان یہی ہے کہ ٹی ٹوئنٹی سیریز میں ہی آزمایا جائے۔
ٹیم مینجمنٹ تمام دستیاب آپشنزکا جائزہ لے رہی ہے، منگل کو پریکٹس سیشن کے بعد ہی حتمی فیصلے ہوں گے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں