224

لاہور ہائیکورٹ کا پنجاب کی تمام غیر قانونی ہاﺅسنگ سوسائٹیوں کو ایک ماہ میں قانون کے مطابق رجسٹرڈ کرنے کا حکم

ہائیکورٹ کا ایل ڈی اے کو پنجاب کی تمام غیر قانونی کوآپریٹو ہاﺅسنگ سوسائٹیوں کو ایک ماہ میں قانونی تقاضے پورے کرنے کے بعد رجسٹرڈ کرنے کا حکم‘ عدالت نے چیف سیکرٹری پنجاب کو اعلیٰ سطحی کمیٹی تشکیل دینے کا بھی کہہ دیا۔ جسٹس علی اکبر قریشی نے درخواست پر سماعت کی اور چیف سیکرٹری پنجاب اکبر درانی سمیت دیگر افسر پیش ہوئے۔ درخواست گزار نے موقف اختیار کیاکہ ایل ڈی اے نے متعدد ہاﺅسنگ سوسائٹیز کو غیر قانونی قرار دے کر ان سے بنیادی سہولتیں چھین لی ہیں‘ ایل ڈی اے اگر بروقت ایکشن لیتا تو غیر قانونی ہاﺅسنگ سوسائٹیز بن ہی نہیں سکتی تھیں لہٰذا عدالت ایل ڈی اے قواعد و ضوابط پورے کرنے والی ہاﺅسنگ سوسائٹیز کو قانونی قرار دے۔ عدالت نے ریمارکس دیئے کہ ہاﺅسنگ سوسائٹیز کو مسمار کرنے کی بجائے انہیں قانونی حیثیت دیں گے‘ عدالت نے حکم دیا کہ تمام ہاﺅسنگ سوسائٹیز کو لیگل کرنے کیلئے چیف سیکرٹری پنجاب اعلیٰ سطح کمیٹی تشکیل دیں جس پر چیف سیکرٹری نے عدالت میں بیان دیا کہ عدالتی حکم پر من و عن عمل ہوگا ‘ ڈی جی ایل ڈی اے نے عدالت کو بتایا کہ تمام ہاﺅسنگ سوسائٹیز کے مالکان سے ملکر قواعد و ضوابط بنا لیتے ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں