67

مریخ پر نئی دریافت، ماہرین خود چونک اٹھے

اٹلی، جرمنی اور آسٹریلیا کے ماہرین فلکیات نے مشترکہ تحقیق میں انکشاف کیا کہ مریخ پر جھیلوں کا پورا نظام موجود ہے لیکن یہ نیٹ ورک کافی گہرائی میں چھپا ہوا ہے جس کے باعث پوشیدہ ہے ۔رپورٹ کے مطابق اس نظام میں تین بڑی جھیلیں ہیں جن میں سب سے بڑی جھیل 30 کلومیٹر لمبی اور 20 کلومیٹر چوڑی ہے ، جو سرد لیکن ‘مائع پانی’ والے متعدد تالابوں سے گھری ہوئی ہے اور یہ مریخ کے قطب جنوبی میں واقع ہے ۔یہ تحقیق نیچر ایسٹرونومی نامی جرنل میں شائع ہوچکی ہے ۔ماہرین کا کہنا ہے کہ مریخی سطح کے نیچے چھپی ہوئی ان جھیلوں میں مائع پانی کا درجہ منفی 68 ڈگری سینٹی گریڈ کے لگ بھگ ہے جس سے یہ کہا جاسکتا ہے کہ پانی بہت زیادہ نمکین ہوگا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں