218

پاکستان میں 10 سال بعد ٹیسٹ کرکٹ بحال، سری لنکا کی بیٹنگ

سری لنکا کی پہلے ٹیسٹ میں پاکستان کیخلاف بیٹنگ جاری ہے اور مہمان ٹیم نے 4 وکٹ کے نقصان پر 127 رنز بنالئے ہیں۔
پاکستان اور سری لنکا کے درمیان 2 ٹیسٹ میچوں کی سیریز کا پہلا میچ راول پنڈی کرکٹ اسٹیڈیم میں کھیلا جارہا ہے جس کے ساتھ ہی پاکستان میں 10 سال بعد ٹیسٹ کرکٹ بحال ہوگئی ہے اور راول پنڈی کے سونے میدان 15 برس بعد پھر سے آباد ہوگئے ہیں۔ اس تاریخی موقع پر پی سی بی نے کھلاڑیوں کے لیے یادگاری کیپس تقسیم کیں جبکہ سیکیورٹی کے سخت انتظامات ہیں۔
سری لنکا نے پاکستان کیخلاف ٹاس جیت کر بیٹنگ کا فیصلہ کیا اور بیٹنگ جاری ہے۔ سری لنکن کپتان کرونا رتنے نصف سنچری مکمل کرنے میں کامیاب ہوگئے ہیں۔ ایک موقع پر عثمان شنواری نے کرونا رتنے کو 31رنز پر بولڈ کیا لیکن بیلز نہ گریں اور اس طرح انہیں لائف لائن مل گئی۔
وقفے کے بعد سری لنکا کی پہلی وکٹ96رنز پر گرگئی اور کرونا رتنے 59 رنز بنا کر شاہین شاہ آفریدی کی گیند پر آؤٹ ہوگئے۔ سری لنکا کی دوسری وکٹ 109 رنز پر گری اور اوشاڈا فرنانڈو 40 رنز بنا کر نسیم شاہ کا شکار بنے۔ سری لنکا کی چوتھی وکٹ 127 رنز پر گرگئی اور چندی مل 2 رنز بنا کر محمد عباس کی گیند پر بولڈ ہوگئے۔
اس میچ میں اتفاق کی بات یہ ہے کہ پاکستان کے تمام 11 کھلاڑی سری لنکاکےخلاف ہوم گراؤنڈ پر پہلا ٹیسٹ کھیل رہے ہیں۔ ٹاپ آرڈر اور اوپنرز میں عابد علی، شان مسعود اور اظہر علی جبکہ مڈل آرڈر میں بابر اعظم، اسد شفیق اور حارث سہیل شامل ہیں، وکٹ کیپنگ کے فرائض محمد رضوان سر انجام دے رہے ہیں جبکہ فاسٹ بولرز میں نسیم شاہ، عثمان شنواری، محمد عباس، شاہین آفریدی شامل ہیں۔
ٹاس جیتنے کے بعد گفتگو کرتے ہوئےسری لنکن ٹیم کے کپتان کرونا رتنے نے ابر آلود موسم کے حوالے سے کہا کہ ہمارے کھلاڑی ان کنڈیشز میں کھیلنے کےعادی ہیں، وکٹ بیٹنگ کے لیے اچھی ہے اس لیے بیٹنگ کا فیصلہ کیا۔
قومی ٹیم کے کپتان اظہر علی نے کہا کہ ہم نے بہت عرصے سے پاکستان میں کرکٹ نہیں کھیلی، وکٹ کو دیکھ کر 4فاسٹ بولرز کھلانے کا فیصلہ کیا ہے، عابد علی اور عثمان شنواری ٹیسٹ ڈیبیو کریں گے، یاسر شاہ کو ٹیسٹ اسکواڈ سے ڈراپ کرنا مشکل فیصلہ تھا، فواد عالم گیارہ رکنی اسکواڈ میں شامل نہیں ہیں۔
راولپنڈی اسلام آباد میں رات گئے برش سے موسم خوشگوار ہوگیا ہے جبکہ اس وقت بھی موسم ابر آلود ہے اور بارش کا امکان ہے۔ سیریز کا دوسرا ٹیسٹ میچ 19 سے 23 دسمبر تک کراچی میں ہوگا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں