38

گستاخانہ خاکوں کی اشاعت پرفرانسیسی سفیردفترخارجہ طلب

وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی کا کہنا ہے کہ معاشروں کوتقسیم کرنے کی کوشش کی جارہی ہے، آزادی رائے کی بھی حدود وقیود ہوتی ہیں۔
وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا کہ فرانس کے سفیرکو آج دفترخارجہ طلب کیا گیا ہے، فرانس کے سفیرکے سامنے گستاخانہ خاکوں پراحتجاج کیا جائے گا، فرانسیسی صدرکے بیان پر مسلمانوں میں غم و غصہ ہے ۔ وقت آگیا ہے اس معاملے پر اجتماعی فیصلہ ہونا چاہیے، اس مسئلے پر مسلم امہ کا کوئی اختلاف نہیں۔
شاہ محمود قریشی نے کہا کہ معاشروں کو تقسیم کرنے کی کوشش کی جارہی ہے، آزادی رائے کی بھی حدود وقیود ہوتی ہیں، نفرت کے بیچ بونے کا ردعمل معاشرے کی تقسیم کی صورت میں آتا ہے، اسلام کے خلاف نفرت کو ہوا دی جارہی ہے اس پر پابندی لگنی چاہیے، نائیجر میں او آئی سی کے وزرائے خارجہ کے اجلاس میں قرارداد پیش کروں گا، فرانس کے سامنے مسلمانوں کے جذبات رکھیں گے، اقوام متحدہ کو معاملے کا نوٹس لینا چاہیے۔
شاہ محمود قریشی نے کہا کہ اسلام کے خلاف مواد پر پابندی لگنی چاہیے، فرانسیسی صدر کے بیان پر گھر گھر احتجاج کی کیفیت ہوسکتی ہے۔ اسلام فوبیا دن بدن بڑھتا جارہا ہے۔ مہذب ملکوں کو مسلمانوں کے جذبات کا احترام کرنا چاہیئے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں