104

12 سالہ بچے کا کارنامہ جو سائنسدان بھی نہیں کرپاتے

جی ہاں محض 12 سال کی عمر میں امریکی لڑکے جیکس اوسالٹ نے اپنے گھر کے ایک کمرے میں جوہری فیوژن ری ایکٹر بنانے میں کامیابی حاصل کی اور اب اس کا نام گنیز بک آف ورلڈ ریکارڈ کا حصہ بن گیا ہے ۔امریکا کے شہر ممفس سے تعلق رکھنے والا یہ لڑکا، جس کی عمر اب 15 سال ہے ، ایک فعال جوہری ری ایکٹر تیار کرنے والا کم عمر ترین فرد ہے ۔یہ مشین کسٹمائز ویکیومز، پمپس اور چیمبر سے تیار کی گئی جو اس لڑکے نے ای بے سے خریدے اور اس پر کل خرچہ 10 ہزار ڈالرز ہوا۔اس کی مشین ایٹموں کو اتنی طاقت سے دباتی ہے جس سے توانائی خارج ہوکر اٹیم کے اندر پھنس جاتی ہے ۔ بچے نے مشین کی تیاری کی تفصیلات انٹرنیٹ سے حاصل کیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں