441

DHA اسٹیٹ ایجنٹس ایسوسی ایشن کے چیئرمین اور صدر کے مابین شدید اختلافات

DHAاسٹیٹ ایجنٹس ایسوسی ایشن کے چیئرمین ملک آصف جہانگیر اور صدر میجر (ر) رفیق حسرت کے مابین ان دنوں شدید اختلافات پیدا ہو چکے ہیں۔ اس بات کا اظہار چیئرمین ملک آصف جہانگیر نے گزشتہ دنوں فیز 6 میں واقع اپنے آفس میں ایک پریس کانفرنس کے دوران کیا۔ انہوں نے اس موقع پر انتہائی پُراعتماد لہجہ استعمال کرتے ہوئے کہا کہ ایسوسی ایشن کے صدر نے کوئی کام نہیں کیا‘ کارکردگی انتہائی مایوس کن رہی۔ ڈیلرز کو کوئی ریلیف دلانے میں کامیاب نہیں ہو سکے۔ صدر صاحب نے اپنی من مانی کی‘ ن لیگ کے ساتھ اپنے تعلقات ہونے کی وجہ سے چیئرمین کا وعدہ مجھے دیاگیا‘ میری خدمات نہیں لی گئیں مجھے کسی میٹنگ میں نہیں بلایا گیا نہ صرف یمرے ساتھ بلکہ دیگر کئی عہدےداروں کے ساتھ بھی رابطے میں نہیں رہے کسی تجویز پر عمل نہیں کیا گیا۔ ڈیلرز کو مزید تکالیف پہنچائی گئیں۔ ڈی ایچ اے میں اشٹام ڈیوٹی جعلی نکلنے پر وینڈرز کیخلاف کوئی کارروائی نہیں کی گئی بلکہ ڈیلرز کو ناحق پریشانی میں مبتلا کردیاگیا۔ میں نے ٹیکس کے کیس میں 25لاکھ کی آفر بھی کی لیکن اسے رد کردیا گیا۔ ٹیکسز سے نجات دلانے کے حوالے سے کوئی میڈیا مہم نہیں چلائی گئی۔ اینکرز کو اعتماد میں نہیں لیا گیا۔ کوئی اچھا وکیل اس سلسلے میں نہیں لیا کیونکہ ایسا کرنے سے صرف مسلم لیگ ن سے ان کے اختلافات جنم لے سکتے تھے۔ ملک آصف جہانگیر نے کہا کہ میرا ایسوسی ایشن کے صدر میجر رفیق حسرت سے ایک ڈیڑھ سال سے کوئی رابطہ نہیں ہے اور نہ ہی آئندہ ان سے کوئی تعلق رکھوں گا۔ ملک آصف جہانگیر نے کہا کہ میں نے موجودہ حکومت کی اعلیٰ قیادت سے رابطہ کرلیا ہے اب پراپرٹی بحران کے خاتمہ کیلئے اکیلا ہی میدان میں نکل کھڑا ہوا ہوں انشاءاللہ ڈیلرز برادری کیلئے کسی صدر کے بغیر ہی فلاح و بہبود کروں گا۔ DHA کے فنڈز کا غلط استعمال کیا گیا۔ اخبارات میں اشتہارات نہیں دیئے گئے اور فنڈز کو دفتر کے AC کے بل اور چائے پر پانی پر ہی خرچ کیا گیا۔ ایسوسی ایشن کے الیکشن سے پہلے پراپرٹی پر عائد ٹیکسز کے حوالے سے اپنی ڈیلر برادری کو اچھی خبر دوں گا اور حکومت پر دباﺅ بڑھا کر پراپرٹی کاروبار کو پہلے جیسا عروج دلاﺅں گا۔ ملک آصف جہانگیر نے کہا کہ میںاپنے آئندہ لائحہ عمل کا اعلان کروں گا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں